قید اور سزا سے حفاظت کی ایک دعا

حضرت علی رضی اللہ عنہ کی دعائیں

حضرت علی رضی اللہ عنہ فرمایا کرتے تھے..۔
۔‘‘اَعُوْذُبِکَ مِنْ جُھْدِ الْبَلَآءِ وَدَرْکِ الشَّقَآءِ وَشَمَاتَۃِ الِاَعْدَاءِ وَاَعُوْذُبِکَ مِنَ السِّجْنِ وَالْقَیْدِ وَالسَّوْطِ’’۔

ترجمہ:۔ (اے اللہ!) بلا و مصیبت کی سختی کے اور بد قسمتی کے پکڑ لینے سے اور دشمنوں کے خوش ہونے سے تیری پناہ چاہتا ہوں اور جیل ’بیڑی اور کوڑے سے تیری پناہ چاہتا ہوں’’…(اخرج یوسف القاضی کذافی الکنز 304/1)
حضرت عمر بن سعید نخعی رحمہ اللہ کہتے ہیں کہ میں نے حضرت علی بن ابی طالب رضی اللہ عنہ کے پیچھے ابن مکنف کی نماز جنازہ پڑھی… حضرت علی رضی اللہ عنہ نے چار تکبیریں کہیں اور ایک طرف سلام پھیرا پھر انہو ں نے ابن مکنف کو قبر میں اتارا اور پھر فرمایا اے اللہ! یہ تیرابندہ ہے اور تیرے بندے کا بیٹا ہے تیرامہمان بنا ہے اور تو بہترین میزبان ہے۔
اے اللہ! جس قبر میں یہ داخل ہوا ہے اسے وسیع فرما دے اور اس کے گناہ معاف فرما دے… ہم تو اس کے بارے میں خیر ہی جانتے ہیں لیکن تو ہم سے زیادہ جانتا ہے اور یہ کلمہ شہادت:۔
۔”اَشْھَدُ اَنْ لَّا اِلٰـہَ اِلَّا اﷲُ وَاَنَّ مُحَمَّدًا رَّسُوْلُ اﷲِ”۔ پڑھا کرتا تھا… (اخرجہ البیہقی کذافی الکنز 119/8)

کتاب کا نام: مجربات اکابر
صفحہ نمبر: 140